حیرت زدہ کر دینے والے ہمارے سیارے زمین کے دلچسپ حقائق

خالق کائنات نے فرمایا ہے کہ اُس نے اس کائنات کو 6 دن میں پیدا کیا ہے اور انسان کے پاس ابھی اتنا علم نہیں کہ اس کی وسعت کا اندازہ بھی لگا سکے کہ یہ کتنی بڑی ہے اور اس عظیم کائنات میں ہمارا سیارہ زمین سائنس کے مُطابق 4.54 بلین سال پہلے وجود میں آیا اور بقول سائنس کے یہ واحد سیارہ ہے جس کی فضا میں آکسیجن گیس موجود ہے اور جس پر خُشکی کیساتھ سمندر اور زندگی پائی جاتی ہے۔

اس آرٹیکل میں میں اپنے سیارے زمین کے چند ایسے حقائق کا ذکر کریں گے جو جہاں آپ کی معلومات میں اضافے کا باعث بنیں گے وہاں آپکی عقل کو حیرت میں ڈالکر غور کرنے پر مجبور کریں گے اور غور کرنے والے بہت سی نشانیوں کو سمجھ جاتے ہیں۔

سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ زمن تقریباً 4.54 بلین سال پُرانی ہے اور یہ بلکل گول نہیں ہے بلکہ شمالی اور جنوبی کناروں پر یہ سیدھی ہے۔

سائنس کے مُطابق زمین کی فضا کا 21 فیصد حصہ آکسیجن گیس پر مشتعمل ہے اور اس کی فضا میں 78 فیصد نائٹروجن اور باقی مختلف قسم کی گیسیں پائی جاتی ہیں اور سائنس کے علم کے مُطابق یہ واحد سیارہ ہے جس کی سطح پر پانی اور زندگی موجود ہے۔

File:Elizabeth II greets NASA GSFC employees, May 8, 2007 edit.jpg
NASA/Bill Ingalls / Public domain

زمین نظام شمسی کا پانچواں بڑا سیارہ ہے اور آپ کو حیرت ہو گی کہ برطانیہ کی ملکہ الزبتھ دوئم اس سیارے کے 1/6 حصے کی مالک ہے اور اس وقت زمین پر اتنے بڑے رقبے کی ملکیت اور کسی شخصیت کے پاس نہیں ہے۔

سائنس دانوں کا کہنا ہے کہ شروع میں درختوں کی بجائے زمین بڑے بڑے مشروم کے پودوں سے بھری ہُوئی تھی اور زمین دُنیا کا واحد سیارہ ہے جہاں پانی تین حالتوں میں پایا جاتا ہے یعنی برف، لیکویڈ اور ہوا میں بطور نمی اور زمین کا 1/3 حصہ مکمل اور درمیانے صحرا پر مشتعمل ہے۔

File:David Torres Costales Chimborazo Riobamba Ecuador Montaña Mas Alta del Mundo.jpg
Dabit100 / David Torres Costales / CC BY-SA

اگر زمین کے پاس چاند نہ ہو تو زمین کا دن صرف 6 گھنٹے کا رہ جائے اور آپ کو یہ جان کر بھی حیرت ہوگی کہ اگر بیس کیمپ سے حساب لگایا جائے تو زمین کا سب سے اونچا پہاڑ ماؤنٹ ایوریسٹ نہیں ہے بلکہ ماؤنٹ چیمبورازو ہے اور یہ پہاڑ خلا کے زیادہ قریب ہے۔

File:Veryovkina cave. Babatunda pit.jpg
Petr Lyubimov / CC BY-SA

انسان زمین پر موجود پانی کا صرف 0.003 حصہ استعمال کرتا ہے اور زمین پر سب سے گہری غارویروکینا ہے جسکی گہرائی 2212 میٹر یعنی 7257 فٹ ہے اور یہ غار روس میں ہے۔

C:\Users\Zubair\Downloads\nature-light-cloud-sky-sunshine-sun-896263-pxhere.com.jpg

زمین کا انگلش نام Earth لفظ اینگلو سیکسن سے وجود میں آیا جسکا مطلب سوئل یعنی مٹی ہے اور زمین کو روشن کرنے والی سُورج کی روشنی زمین تک 8 منٹ 19 سیکنڈ میں پہنچتی ہے یعنی اگر سُورج پر روشنی کی رفتار 299792 کلومیٹر کی رفتار سے جایا جائے تو ہمیں سُورج پر پہنچنے کے لیے 8 منٹ اور 19 سیکنڈ لگیں گے۔

File:Evening, Nile River, Uganda.jpg
Rod Waddington / CC BY-SA

انٹارکٹکا زمین کا سب سے سرد براعظم ہے، دریائے نیل زمین کا سب سے لمبا دریا ہے اور کُچھ لوگوں کا کہنا ہے کہ سب لمبا دریا ایمازن ہے اور زمین کا اس وقت سب سے اونچا درخت Hyperion ہے جو کیلفورنیا میں ہے اور اس درخت کو اونچائی 380.1 فٹ ہے۔

C:\Users\Zubair\Downloads\green-grasses-on-sahara-desert-1001435.jpg
Photo by Greg Gulik from Pexels

زمین کے اندر اس کی انرکور کا درجہ حرارت سُورج کی سطح کے درجہ حرارت 50505 ڈگری کے برابر ہے اور زمین کا سب سے گرم کا صحرا سہارا ڈیزرٹ ہے جہاں 13 ستمبر 1922 کو 58 ڈگری درجہ حرارت ریکارڈ کیا گیا۔

سائنس دانوں کا کہنا کے 700 ملین سال پہلے ساری زمین برف سے ڈھکی ہُوئی تھی اور آج زمین کا درجہ حرارت مسلسل بڑھنے سے برف کے گلیشیرز پگھل رہے ہیں اور پچھلے چالیس سالوں میں زمین پر رہنے والے 40 فیصد جنگلی جانور ختم ہو چُکے ہیں اور یہ بات زمین پر رہنے والوں کے لیے لمحہ فکریہ ہے۔

ایک اندازے کے مُطابق انسان زمین کا 11 فیصد حصہ کھانا اُگانے کے لیے استعمال کرتا ہے اور جس طرح زمین پر ارتھ کوئیک یعنی زلزلہ آتا ہے اسی طرح چاند پر مُون کوئیک یعنی زلزلے آتے ہیں۔