میڈیکل سائنس کے مطابق تانبے کے برتن استعمال کرنے کے 10 ناقابل فراموش فائدے

میڈیکل سائنس کے مطابق تانبے کے برتن استعمال کرنے کے 10 ناقابل فراموش فائدے

آج سے 30 سے 40 سال پہلے ہمارے بزرگ گھروں میں کاپر یعنی تانبے کے برتن استعمال کرتے تھے اور شادی پر دلہنوں کو جہیز میں تانبے کے برتن ملا کرتے تھے، اب بھی دیہات میں کئی گھروں میں وہی پُرانے تانبے کے برتن استعمال کیے جاتے ہیں اور ان برتنوں میں کھانا کھانے کو حفظان صحت کے اصول سمجھا جاتا ہے۔

اس آرٹیکل میں تانبے کے برتن استعمال کرنے کی 10 اہم وجوہات کا ذکر کیا جائے گا جن سے ہمیں پتہ چلے گا کے ہمارے بزرگ تانبے کے برتن کیوں استعمال کرتے تھے ۔

نمبر1 انسانی جسم میں کاپر کی اہمیت

کاپر ایک زبردست منرل ہے جو ہماری صحت کے لیے بہت ضروری ہے یہ خون میں سرخ خلیے پیدا کرتا ہے اور ہڈیوں کو مضبوط کرتا ہے اور نظام انہظام میں انتہائی اہم کردار ادا کرتا ہے۔
ہمارا جسم کاپر خود سے پیدا کرنے کی صلاحیت نہیں رکھتا ہم اسے مختلف خوراکوں سے حاصل کرتے ہیں اور کاپر کی کمی کو پُورا کرنے کے لیے اگر پانی کو کاپر یعنی تانبے کے برتن میں محفوظ کیا جائے تو پانی میں یہ قیمتی منرل شامل ہوجاتا ہے۔

نمبر 2 جراثیم کا خاتمہ کرتا ہے

Image result for copper kill bacteria
پہلے زمانے میں گھروں میں پانی کے پائپ اور نل تانبے سے بنائے جاتے تھے کیوں کے تانبا جراثیم کو پیدا نہیں ہونے دیتا، سائنس کے مطابق تانبے کا برتن E.Coli جو کے پانی کا ایک جراثیم ہے کو 24 گھنٹے میں ختم کر دیتا ہے کاپر پانی کے جراثیم Salmonella, Thypus, Shigella spp کو ختم کر دیتا ہے اور انٹرو وائرس اور ہیپاٹاٹئس اے کے جراثیم کا خاتمہ کر دیتا ہے۔

نمبر 3 گلے کے غدود کے لیے

گلے کے غدود کئی وجہ سے خراب ہوتے ہیں لیکن ان کے خراب ہونے کی سب سے اہم وجہ جسم میں کاپر کی کمی ہے، یہ منرل گلے کے غدود کو درست رکھنے میں اہم کردار ادا کرتا ہے ، اگر کھانے سے پہلے کاپر کے گلاس میں پانی پیا جائے تو اس تکلیف سے بچا جا سکتا ہے۔

نمبر 4 جوڑوں کے درد کے لیے

جوڑوں کے درد کے لیے تانبے کے برتن کا استعمال طبیب صدیوں سے تجویز کررہے ہیں، کاپر ہڈیوں اور اُن کے جوڑوں کے لیے ایک مفید منرل ہے جو ہڈیوں کے درمیان خلا کو برقرار رکھنے میں مدد دیتا ہے جس سے جوڑوں کے درد کی بیماری نہیں ہوتی۔

نمبر 5 خون کی کمی

تانبا خون کی کمی کی شکایت انیما میں انتہائی فائدہ مند ثابت ہوتا ہے یہ خون میں ہیموگلوبن کی مقدار کو بڑھاتا ہے ، اگر پانی کی کاپر کے برتن میں محفوظ رکھ کر پیا جائے تو یہ اینیما کو پیدا ہی نہیں ہونے دیتا۔

نمبر 6 زخموں کی خشک کرنے کے لیے

یہ منرل زخموں کو ٹھیک کرنے کے لیے بہت مفید ہے، کاپر زخموں کو ٹھیک کرنے والی بہت سی ادویات میں استعمال کیا جاتا ہے تاکہ زخم جلد بھر جائے، جلد پر زخم کی صورت میں کاپر کے برتن میں محفوظ پانی پینا زخموں کو جلد ٹھیک کرنے میں مدد گار ثابت ہوتا ہے۔

نمبر 7 عصابی تناؤ اور دماغی بیماریوں کے لیے

Image result for adhd
ماہرین کا کہنا ہے کہ اکثر ADHD (Attention Defective Hyperactive Disorder) کے مریض جسم میں کاپر کی کمی کا شکار ہوتے ہیں جس سے انہیں اور بھی کئی طرح کی ذہنی بیماریاں لگ جاتی ہیں ، کاپر کی کمی سے فوری فیصلہ کرنے کی قوت صلب ہو جاتی ہے اور مریض چڑچڑے پن میں مبتلا ہو جاتا ہے۔
کاپر کے برتن میں کھانا اور پینا ان بیماریوں سے محفوظ رکھنے میں انتہائی مددگار ثابت ہوتا ہے۔

نمبر 8 کینسر سے بچاؤ کے لیے

Image result for cancer and copper
کینسر ایک جان لیوا مرض ہے جو میریض کو جیتے جی مار دیتا ہے، کاپر کینسر سے لڑنے کے لیے ایک انتہائی اہم منرل مانا جاتا ہے جو جسم میں کینسر سے متاثر حصے کو نا صرف ٹھیک کرتا ہے بلکے کینسر کے سیلز کو پھیلنے سے روکتا ہے اور جسم کو اینٹی آکسائیڈینٹ مہیا کرتا ہے۔

نمبر 9 عمر بڑھنے نہیں دیتا

عمر کے بڑھنے کے ساتھ انسانی جلد بھر جھریاں نمودار ہوتی ہیں، کاپر کے اندر قدرتی اینٹی آکسائیڈینٹس جسم پر ان جھریوں کو پڑنے سے روکتے ہیں اور انسان کو لمبی عمر تک جوان رکھتے ہیں اور عُمر کے اثرات کو جسم پر ظاہر ہونے سے روکتے ہیں۔

نمبر 10 حاملہ خواتین کی صحت کے لیے

کاپر خون میں سُرخ خلیے پیدا کرتا ہے جو دوران زچگی خواتین کے لیے بہت مفید ہیں ، یہ ماں کے پیٹ میں بچے کے دماغ ، دل اور دیگر اعضا کو بنانے میں بھی اہم کردار ادا کرتا ہے ، گائیناکالوجسٹ اسی لیے خواتین کو ایسے سپلیمینٹ دیتے ہیں جس میں کاپر کی مقدار موجود ہو، کاپر کے جگ میں پانی کو محفوظ رکھ کر 24 گھنٹے بعد پینے سے اس منرل کی کمی کو بغیر سپلیمینٹ کے بھی پُورا کیا جا سکتا ہے۔